بی ایچ یو کے امتحان میں جی ایس ٹی پر آیا سوال،طلبا دیکھنے لگے آسمان،ہنگامہ

slider, ریاستی خبریں

وارانسی:ملک کی مشہور بنارس ہندو یونیورسٹی ایک بار پھر سرخیوں میں ہے،اس بار امتحان میں پوچھے گئے سوال کو لیکر بی ایچ یو چرچہ میں ہے۔دراصل گزشتہ روز ایم اے کا امتحان ہوا ،یونیورسٹی سماجیات سبجیکٹ تھا اور سوالنامہ میں دو سوال دیکھ سارے امتحان دینے والے طلبا حیران و پریشان ہوگئے ۔ایک سوال یہ تھا کہ کوثلیہ کے معاشیات کے حوالے سے جی ایس ٹی پر مضمون تحریر کریں ،جبکہ دوسرا سوال منو کے بارے میں تھا  اور سوال تھا کہ پہلے ہندوستانی مفکر منو کی عالمگیریت کے بارے میں بات کریں۔یہ دونوں ایسے سوالا ت تھے جن کا سبجیکٹ اور کورس سے کوئی دور دور تک لینا دینا نہیں تھا ۔اور ناہی کلاس میں طلبا کو اس بارے میں پڑھایا گیا تھا اس لئے طلبا حیران ہو گئے کہ اس پندرہ نمبرات کے دونوں سوالوں کا جواب کہاں سے دیں ۔بی ایچ یو کی ایک الگ پہچان ہے اور اسی پہچان کی ایک دلیل یہ بھی ہے کہ مودی سرکار کی نئی جی ایس ٹی پالیسی اور سنگھ کے مفکر منو کے بارے میں طلبا کو جاننے کیلئے مجبور کیا گیا ۔سوال بنانے والے پروفیسر کوشل کشور کا کہنا ہے کہ یہ نیا آئیڈیا تھا طلبا کو جانچنے کا اس لئے اس طرح کا سوال بنایا گیا ۔جبکہ طلبا کا کہنا ہے کہ ناہی مجھے اس سلسلے میں کچھ بتایا گیا اور ناہی اس کے بارے میں پہلے کوئی خبر دی گئی کے اس قسم کے سوال بھی آسکتے ہیں۔ 

loading...

جواب دیں