نئی دہلی:سیاسی جماعتوں پر نظر رکھنے والی ایک تنظیم ”ایسوسی ایشن فار ڈیموکریٹک ریفارمس (اے ڈی آر)کی ایک رپورٹ نے ہلچل مچادی ہے۔اے ڈی آر کی رپورٹ کی مانیں تو بھارت میں قریب 35 فیصدی ایسے وزراء اعلی ہیں جن پر مجرمانہ مقدمات درج ہیں۔جبکہ 81 فیصدی وزراء اعلی کروڑپتی ہیں۔اے ڈی آر نے نیشنل الیکشن واچ کے ساتھ مل کر تیار کرنے کے بعد اس رپورٹ کو گزشہ روز پیش کیا ہے جس سے سیاسی گلیاروں میں گہماگہمی پیدا ہوگئی ہے۔اس رپورٹ میں ملک کے 31 وزراء اعلی پر تفصیل پیش کی گئی ہے۔ رپورٹ کے مطابق آندھرا پردیش کے وزیر اعلی چندر بابو نائیڈو 48۔117 کروڑ روپئے کی جائیداد کے ساتھ لسٹ میں اول نمبر پر ہیں۔مدھیہ پردیش کے سی ایم شیوراج سنگھ چوہان 27۔6 کروڑ کے ساتھ 14ویں پائیدان پر ہیں،پندرہ نمبر پر چھتیس گڑھ کے سی ایم ڈاکٹر رمن سنگھ ہیں ،ان کی جائیداد61۔5 کروڑ کی ہے۔ اے ڈی آر اور نیشنل الیکشن واچ نے ملک بھر میں ریاستی اور مرکزی کے ماتحت چلنے والی ریاستوں میں ہوئےاسمبلی انتخابات میں ان کے موجودہ سی ایم کی طرف سے جمع کردہ حلف ناموں کا تجزیہ کرنے کے بعد یہ رپورٹ تیار کی ہے۔ رپورٹ کے مطابق 25 وزراء اعلی یعنی 81 فیصد سی ایم کروڑپتی ہیں ،ان میں سے دو وزیر اعلی کے پاس 100 کروڑ روپئے سے زیادہ کی جائیداد ہے۔ایک چندر بابو نائیڈو ہیں جبکہ دوسرے اروناچل پردیش کے سی ایم پریما کھاندو ہیں۔ان کی جائیداد 57۔129کروڑ روپئے ہے۔تیسرے نمبر پر پنجاب کے سی ایم کپٹن امریندر سنگھ ہیں جن کے پاس 31۔48 کروڑ کی جائیداد ہے۔رپورٹ کے مطابق وزراء اعلی کے جائیداد کی شرح فیصد 18۔16 کروڑ ہے ۔سب سے کم جائیداد والے سی ایم تریپورہ کے مانک سرکار ہیں ۔ان کی جائیداد صرف 27 لاکھ روپئے ہے۔ان سے ٹھیک اوپر مغربی بنگال کی سی ایم ممتا بنرجی ہیں جن کے پاس صرف 30 لاکھ کی جائیداد ہے۔جموں کشمیر کی سی ایم محبوبہ مفتی کے پاس 55 لاکھ ،اترپردیش کے سی ایم یوگی آدتیہ ناتھ کے پاس 98۔95 لاکھ کی جائیداد ہیں۔یوگی آدتیہ ناتھ لسٹ میں 26 نمبر پر ہیں ۔ رپورٹ میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ ملک کے قریب 35 فیصد وزراء اعلی پر مجرمانہ مقدمات درج ہیں ،اے ڈی آر کی رپورٹ کے مطابق 31 وزراء اعلی میں سے گیارہ نے خود اپنے خلاف مقدمات درج ہونے کا اعلان کیا ہے ۔یہ کل تعداد کی 35 فیصد ہیں۔ان میں سے 26 فیصدی کے خلاف قتل،قتل کی کوشش،دھوکہ دری جیسے سنگین الزامات کے تحت مقدمات درج ہیں۔

فہرست

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here