(رانچی) : شمالی ہندوستان سے کہیں بھی چاند دیکھے جانے کی تصدیق اب تک نہیں ہوئی ہے ۔صوبہ جھارکھنڈ کے قاضئ شریعت حضرت مفتی عابد حسین مصباحی نے چاند نہ دیکھے جانے کا اعلان کیا ہے۔ اعلان میں کہا گیا کہ 29 شعبان کو رانچی سمیت ریاست کے کسی بھی حصے میں رمضان المبارک کا چاند نہیں دیکھا گیا ہے۔ چاند نہیں دیکھے جانے کی صورت میں 18 مئی بروز جمعہ سے رمضان المبارک کی پہلی تاریخ ہوگی۔ غور طلب ہے کہ ریاست بہار کے ادارہ شریعہ پٹنا نے بھی چاند نہیں دیکھے جانے کا اعلان کیا ہے۔ وہیں کرناٹک اور چینئ میں رؤیت عام کی اطلاع کی بنیاد پر امارت شریعہ ہند نے رؤیت ہلال کی تصدیق کا اعلان کیا ہے ۔ امارت شریعہ ہند نے اعلان نامے میں کہا ہے کہ دہلی میں مطلع ابر آلود ہونے کی باعث چاند نہیں دیکھا گیا البتہ آندھر پردیش، کرناٹک اور تمل ناڈو سے چاند دیکھے جانے کی خبر موصول ہوئی ہے۔ اس لیے روئیت ہلال کمیٹی امارت شرعیہ ہند اعلان کرتی ہے کہ کل بتاریخ 17 مئی 2018 رمضان المبارک کی پہلی تاریخ ہوگی۔ دلچسپ بات یہ ہے کہ ریاست جھارکھنڈ کے قاضیٔ شریعت کا کہنا ہے کہ بیرون ریاست بھی رابطہ کیا گیا لیکن کہیں سے چاند نظر آنے کی کوئی خبر نہیں ہے لہٰذا بالاتفاق فیصلہ لیا جاتا ہے کہ 30 کی گنتی پوری کرکےرمضان المبارک کا پہلا روزہ مورخہ 18 مئ بروز جمعہ رکھا جائے گا۔دہلی میں ذاکر نگر میں واقع جامعہ حضرت نظام الدین اولیاء میں بھی تراویح میں نماز ادا نہیں کی جارہی ہے جبکہ پاس میں ہی واقع موتی مسجد میں تراویح کا اہتمام کیا جا رہا ہے اور کل یعنی جمعرات سے روزے کا اہتمام کیا جائے گا.

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here