استبول:ترکی کے صدر رجب طیب اردوگان نے کہا کہ ترکی میں اب اوبیر کی سروس نہیں چلے گی اس کیلئے یہاں جگہ نہیں ہے ۔دراصل ترکی کے صدر نے وہاں کے ٹیکسی ڈرائیورں کی پریشانیوں کو مد نظر رکھتے ہوئے یہ اعلان کیا ہے کہ اب ہمارے یہاں اوبیر کیب کیلئے کوئی جگہ نہیں ہے ،ہمارے لیے ہماری ٹیکسی ہی کافی ہے۔قریب 17400ٹیکسی استنبول میں چلتی ہےجہاں 81 ملین لوگوں کی آبادی ہے اور جب 2014 میں اوبیر کیب نے یہاں اپنا بزنس شروع کیا تب سے وہاں کے ٹیکسی ڈرائیور مشکل میں جی رہے تھے اور آئے دن ان کی مشکلیں بڑھتی جارہی تھیں۔اس کو دیکھتے ہوئے صدر اردوگان نے یہ اعلان کیا ہے کہ اب اوبیر کی سروس ترکی میں ختم کردی جارہی ہے۔اردوگان کا فرمان بھی ایسے وقت میں آیا جب گزشتہ ہفتہ ترکی میں ٹرانسپورٹیشن کو لیکر نئے اور سخت قوانین بنائے گئے ہیں۔جمعہ کے روز استنبول میں خطاب کے دوران صدر اردوگان نے کہا کہ بہت تیزی کے ساتھ اوبیر نے ترکی میں اپنا بزنس پھیلایا تھا اب اسی تیزی کے ساتھ اس کے خاتمے کا اعلان کیا جاتا ہے اور اب اس کیلئے یہاں کوئی جگہ نہیں ہے۔ ہم ٹیکسی ڈرائیوں کی پریشانی مزید نہیں دیکھ سکتے۔انہوں نے کہا کہ ہمارے پاس ہمارا ٹیکسی سسٹم ہے ،یہ اوبیر کہاں سے آیا ہے،یہ یوروپ میں استعمال کیا جاتاہے۔میں اس کی ذرا برابر بھی پرواہ نہیں کرتا۔ ہم خود اپنے لئے اپنا فیصلہ لیتے ہیں۔وہیں دوسری طرف اوبیر کمپنی کی جانب سے اب تک کوئی بیان نہیں آیا ہے۔ بتادیں کہ سال کے آغاز میں ہی ٹکیسی ڈرائیوروں نے اوبیر کمپنی کو عدالت میں گھسیٹا تھا اور کہا تھا کہ یہ ہماری روزی روٹی پر حملہ کررہے ہیں اور غیر قانونی طور پر گاڑیاں چلوا رہے ہیں ۔وہیں دوسری طرف یہ بھی خبر ہے کہ زرد ٹیکسی ڈرائیوروں نے موقع بہ موقع اوبیر کے ڈرائیور پر حملہ بھی کیا ہے اور ان کو نقصان بھی پہنچانے کی کوشش کی ہے۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here