رانچی:ملزمان کے بری ہوکر جیل سے باہر آنے پر ان کا استقبال کرنے کی بات تو آپ نے ضرور سنی ہوگی ،لیکن کیا آپ نے یہ سنا ہے کہ قتل کی سزا کاٹ رہے ملزمان کی ضمانت پر رہا ہوکر باہر آنے پر کسی مرکزی وزیر نے پھول مالا کے ساتھ ان کا ستقبال کیا ہو،یہ شاید پہلی بار ہی سنا ہوگا اور یہ سچ کیا ہے بھارتیہ جنتا پارٹی کے مرکزی وزیر جینت سنہا نے۔جی ہاں ،جھارکھنڈ کے ہزاری باغ میں ایک ایسا ہی معاملہ سامنے آیا ہے جہاں مرکزی وزیر جینت سنہا نے قتل کی سزا کاٹ رہے ملزمان جب ضمانت پر باہر آئے تو مرکزی وزیر نے انہیں اپنے گھر بلا کر ان کا پھول مالا کے ساتھ استقبال کیا ۔خاص بات یہ ہے کہ ان ملزمان پر گزشتہ سال ایک گوشت تاجر کا قتل کرنے کا الزام ہے جس کیلئے وہ اب عمر قید کی سزا کاٹ رہے ہیں ۔جینت سنہا نے انہیں اپنے گھر بلا انہیں پھول مالا پہنایا اور اپنے ساتھ تصویر کھینچوائی۔واضح رہے کہ گوشت تاجر کا قتل اور اس کے بعد اس پورے معاملے کو سیاسی رنگ دینے کی کوشش کی جارہی ہے ،یہی وجہ ہے کی بھاجپا کے لیڈران نے ان ملزمان کا شروع سے ساتھ دیا ہے ۔کچھ مہینے پہلے بھاجپا کے سابق ایم ایل اے شنکر چودھری بھی ان ملزمان کو چھوڑنے کیلئے پندرہ دنوں تک دھرنا پر بیٹھے رہے۔دو جولائی کو جب نتیانند ضمانت پر جیل سے باہر آئے تو اسے لینے کیلئے شنکر چودھری خود گئے ۔اس پورے معاملے میں اپوزیشن پارٹیوں نے بھی اپنے تیر برسانے شروع کردیئے ہیں ۔یوتھ کانگریس کے ایک ٹوئٹ میں کہا گیا ہے کہ ملک کے دس ریاستوں میں شک کی بنیاد پر ابھی تک ۲۷ لوگوں کا قتل ہو چکا ہے اور جینت سنہا ایسا کرنے والوں کا استقبال کر رہے ہیں ۔

Facebook Comments

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here