بیٹی مریم کے ساتھ نواز شریف کو جیل کی سزا،شریف خاندان کی شرافت بے اثر

3

اسلام آباد:پاکستان میں سیاسی گہماگہمی کے بیچ ایک اور بڑا عدالتی فیصلہ آیا ہے جس نے سابق وزیراعظم نواز شریف اور ان کے خاندان کی شبیہ عالمی سطح پر خراب کردی ہے۔دراصل شریف خاندان کے خلاف قومی احتساب بیورو (نیب) کی جانب سے دائر ایون فیلڈ ریفرنس کا فیصلہ سناتے ہوئے اسلام آباد کی احتساب عدالت نے سابق وزیراعظم اور مسلم لیگ (ن) کے قائد نواز شریف کو 10 سال قید، ان کی صاحبزادی مریم نواز کو 7 سال جبکہ داماد کیپٹن (ر) محمد صفدر کو ایک سال قید کی سزا سنائی۔احتساب عدالت کے جج محمد بشیر نے نواز شریف پر 80 لاکھ پاؤنڈ (ایک ارب 10کروڑ روپے سے زائد) اور مریم نواز پر 20 لاکھ پاؤنڈ (30 کروڑ روپے سے زائد) جرمانہ بھی عائد کیا۔ اس کے علاوہ احتساب عدالت نے شریف خاندان کے خلاف ایون فیلڈ ریفرنس کا فیصلہ سناتے ہوئے لندن میں قائم ایون پراپرٹی ضبط کرنے کا حکم بھی دیا۔احتساب عدالت کے جج محمد بشیر کی جانب سے سنائے گئے فیصلے کے مطابق نواز شریف کو آمدن سے زائد اثاثہ جات پر مریم نواز کو والد کے اس جرم میں ساتھ دینے پر قید اور جرمانے کی سزائیں سنائی گئیں جبکہ نواز شریف، مریم نواز اور کیپٹن (ر) محمد صفدر کو ایون فیلڈ ریفرنس سے متعلق تحقیقات میں نیب کے ساتھ تعاون نہ کرنے پر علیحدہ ایک ایک سال قید کی سزا سنائی گئی۔احتساب عدالت کے فیصلے کی روشنی میں مریم نواز اور ان کے خاوند کیپٹن (ر) محمد صفدر الیکشن 2018 میں حصہ نہیں لے سکیں گے جبکہ کیپٹن (ر) محمد صفدر کے پاس احتساب عدالت کے فیصلے کے خلاف اعلیٰ عدلیہ میں اپیل دائر کرنے کی صورت میں الیکشن میں لڑنے کا ایک آپشن موجود ہے۔واضح رہے کہ ایون فیلڈ ریفرنس، سپریم کورٹ کی جانب سے پاناما پیپرز لیکس کیس کے فیصلے کی روشنی میں نیب کی جانب سے دائر کیا گیا تھا۔نیب پراسیکیوٹر سردار مظفر عباسی نے ملزمان کے فیصلوں سے متعلق میڈیا کو آگاہ کرتے ہوئے بتایا کہ حسین نواز اور حسن نواز عدالت میں پیش نہیں ہوئے، ان سے متعلق سزا نہیں سنائی گئی۔مسلم لیگ (ن) کی رہنما مریم نواز لاہور کے حلقہ این اے 127 اور پی پی 137 جب کہ کیپٹن (ر) صفدر این اے 14 مانسہرہ سے امیدوار تھے جو عدالتی فیصلے کے بعد اب الیکشن لڑنے کے اہل نہیں رہے۔نیب پراسیکیوٹر کے مطابق مریم نواز کو جھوٹی دستاویز جمع کرانے پر بھی ایک سال قید کی سزا سنائی گئی ہے جب کہ ملزمان کو قید بامشقت سنائی گئی ہے۔سردار مظفر عباسی نے بتایا کہ نیب آرڈیننس میں سزا کے خلاف اپیل کے لیے 10دن رکھے گئے ہیں اس لیے ملزمان کو سزا کے خلاف 10 دن میں اپیل کا حق حاصل ہے۔ترجمان الیکشن کمیشن کا کہنا ہےکہ مریم نواز کے سزا یافتہ ہونے سے الیکشن پر فرق نہیں پڑے گا، سزا یافتہ ہونے کی وجہ سے بیلٹ پیپرز سے مریم نواز کا نام نکال دیا جائے گا۔مسلم لیگ (ن) کے صدر شہبازشریف نے عدالتی فیصلے کے بعد ہنگامی پریس کانفرنس کی اورفیصلے کو مسترد کرنے کا اعلان کیا۔انہوں نے کہا کہ پاناما، ایون فیلڈ اور آف شور کمپنیوں میں نوازشریف کا نام نہیں، مقدمے میں کوئی ٹھوس قانونی دستاویز مہیا نہیں کی گئی، فیصلے میں بہت قانونی خامیاں ہیں اور فیصلہ ناانصافی کی بنیاد پر کیا گیا۔

You might also like More from author

3 Comments

  1. christian louboutin says

    I simply wanted to thank you so much again. I do not know the things I would have used in the absence of these information provided by you about such a topic. It was actually a real difficult matter in my position, but taking a look at the skilled approach you resolved the issue took me to weep over delight. I will be happier for your information and even wish you recognize what a great job you have been carrying out instructing people through the use of your webpage. Most probably you’ve never got to know any of us.

  2. adidas flux says

    I actually wanted to type a brief remark so as to express gratitude to you for some of the magnificent tips and hints you are placing at this site. My rather long internet investigation has now been paid with reliable content to write about with my friends. I ‘d claim that many of us readers actually are unequivocally blessed to exist in a fabulous site with so many lovely professionals with useful tricks. I feel truly grateful to have come across your web site and look forward to so many more amazing times reading here. Thanks once more for a lot of things.

  3. oakley sunglasses for men says

    I have to express my thanks to this writer for bailing me out of this particular predicament. Right after checking throughout the the web and coming across ideas which were not powerful, I figured my life was well over. Living minus the strategies to the difficulties you have resolved through the site is a crucial case, as well as the kind which could have in a wrong way affected my career if I hadn’t discovered your web site. Your main competence and kindness in playing with all the pieces was priceless. I don’t know what I would have done if I hadn’t encountered such a thing like this. I can at this time look ahead to my future. Thanks very much for this reliable and sensible help. I will not hesitate to refer your site to any person who requires care on this situation.

Leave A Reply

Your email address will not be published.