ریحام خان کی کتاب پر ہنگامہ ہے کیوں برپا۔۔۔۔۔۔۔۔۔

1

اسلام آباد:پاکستان تحریک پارٹی یعنی پی ٹی آئی کے چیف اور سابق کرکٹر عمران خان کی سابق اہلیہ ریحام خان کی آنے والی کتاب کا کچھ حصہ گزشتہ دنوں لیک ہوگیا ،جس کے بعد ٹوئٹر پر سیاسی جنگ شروع ہوگئی۔کتاب کا کچھ حصہ آن لائن ہو جانے کے بعد پی ٹی آئی کے کئی لیڈران اور ترجمان ریحام خان کے اوپر عمران خان کو بدنام کرنے کا الزام لگارہے ہیں ۔پی ٹی آئی کے لیڈروں کا کہنا ہے کہ ریحام خان پاکستان میں ہونے والے انتخابات سے پہلے عمران خان کی شبیہ خراب کرنے والے ایجنڈے کا حصہ بن گئی ہیں۔پی ٹی آئی کے ترجمان فواد چودھری نے ریحام کے اوپر پاکستان مسلم لیگ (نواز شریف)کے لیڈر اور ساابق پی ایم نواز شریف کی بیٹی مریم شریف سے ملاقات کرنے کا بھی الزام لگایا ہے ۔اس کے ساتھ ہی ریحام کے اوپر پی ٹی آئی لیڈر عمران خان کی شبیہ خراب کرنے کیلئے پی ایم ایل۔این۔پارٹی سے دس ہزار پاؤنڈ یعنی قریب 90لاکھ روپئے لینے کا الزام لگایا ہے۔ٹوئٹر پر پی ٹی آئی کے لیڈروں کی طرف سے ریحام خان پر جم کر غصے کا اظہار کیا گیا ہے ،پی ٹی آئی رکن اور پاکستان کے مشہور گلوکار سلمان احمد کا کہنا ہے کہ ذرائع سے جانکاری ملی ہے کہ ریحام کو یہ کتاب لکھنے کیلئے پاکستان مسلم لیگ(نواز)پارٹی کی طرف سے پیس دیئے گئے ہیں۔اس کے ساتھ ہی پی ٹی آئی لیڈر کا یہ بھی کہنا ہے کہ یہ پیسے انہیں نواز شریف کے بھائی شہباز شریف نے دیئے ہیں۔
حالانکہ ریحام نے اپنے اوپر لگے تمام الزام کو خارج کردیا ہے ۔نجی ٹی وی چینل ک دیئے گئے انٹرویو میں ریحام نے کہا کہ انہوں نے کبھی بھی مریم سے ملاقات نہیں کی اور ناہی انہیں شہباز نے پیسے دیئے ہیں ۔ریحام نے کہا کہ شہباز سے پیسے لینے کا جو الزام مجھ پر لگایا گیا ہے وہ غلط اور بے بنیاد ہے ۔میں کبھی بھی ان سے اور مریم سے نہیں ملی ہوں،مجھے سمجھ نہیں آرہا ہے کہ آخر پی ٹی آئی کے لیڈر میری کتاب کو لیکر ڈر کیوں پھیلا رہے ہیں۔’الزامات لگانے والوں کے خلاف عدالت جاؤں گی۔ریحام خان نے پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے چیئرمین اور اپنے سابق شوہر عمران خان پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ ‘وہ آئین کے آرٹیکل 62 پر پورا نہیں اترتے، انہوں نے ان کے ساتھ نکاح کو چھپا کر 2 ماہ تک جھوٹ بولا’۔ساتھ ہی ان کا کہنا تھا کہ ‘جو نگران وزیر اعلیٰ کا نام نہیں دے سکا، وہ ملک کیا چلائے گا؟’


اپنی کتاب کی اشاعت کے حوالے سے ریحام خان نے کہا کہ ان کی ‘کتاب سے الیکشن کو کیا خطرہ؟جو تاریخ بہتر لگی، اُس وقت کتاب منظر عام پر آجائے گی’۔ریحام خان نے یہ بیان ایک ایسے وقت میں دیا ہے جب 2 جون کو تحریک انصاف کے مرکزی ترجمان فواد چوہدری نے ٹوئٹر پر اپنے پیغام میں کہا تھا کہ ریحام خان کی کتاب کی تصنیف و اشاعت کا سارا ڈرامہ حقیقی اپوزیشن کو گرانے کے لیے رچا گیا ہے۔فواد چوہدری کا کہنا تھا کہ ریحام خان کی ملاقاتوں کے سارے ثبوت مل گئے ہیں کہ وہ کب، کہاں، کس سے اور کس کے ذریعے ملیں۔فواد چوہدری کے مطابق ریحام خان نے مریم نواز سے ملاقات کی جس کا اہتمام احسن اقبال نے کروایا، اس ملاقات کے ناقابل تردید شواہد نے ساری سازش کا پول کھول دیا ہے کہ کتاب کی تصنیف و اشاعت کا سارا تماشہ دراصل حقیقی حزب اختلاف کو گرانے کے لیے رچایا گیا ہے۔تاہم احسن اقبال کی جانب سے اس الزام کی تردید کی جاچکی ہے۔واضح رہے کہ ریحام خان کے قریبی ساتھی کا کہنا ہے کہ ان کی کتاب کا متن لیک یا ہیک کر لیا گیا ہے، تاہم کچھ بھی ہو یہ کتاب شائع ہو کر رہے گی۔

You might also like More from author

1 Comment

  1. furtdso linopv says

    Well I definitely liked studying it. This subject offered by you is very practical for accurate planning.

Leave A Reply

Your email address will not be published.