نئی دہلی:بابری مسجد معاملے عدالت کا فیصلہ لکھا جارہا ہےاور مانا جارہا ہے کہ ۱۳،۱۴،۱۵نومبر کو فیصلہ آسکتا ہے چونکہ بقیہ دنوں میں عدالتی کلینڈر  میں چھٹیا ں ہیں اس کے بعد ۱۶ سنیچر کا دن ہے اور اتوار۱۷ نومبر ہے،ایسے میں مانا جارہا ہے کہ ۱۳ نومبر سے ۱۵ پندرہ نومبر کے بیچ فیصلہ آئے گا۔وہیں فیصلے کے پیش نظرایودھیا پوری طرح سے چھاونی میں تبدیل ہوچکا ہے۔حساس مقامات کے آس پاس والے علاقوں کو پوری طرح سیل کیا جاچکا ہے۔پورے فیض آباد میں جگہ جگہ چیک پوسٹ ہیں جہاں ہر آنے جانے والوں کی باریکی سے تلاشی لی جارہی ہے،موبائل کے چارجر تک نہیں لے جانے دیا جارہا ہے۔میڈیا اہلکار کے کیمرے اور بیگ کی تلاشی کے بعد ہی آگے بڑھنے کی اجازت دی جارہی ہے۔صورتحال پر نظررکھنے کیلئے ڈرون کا بھی سہارا لیا جارہا ہے۔ایودھیا میں آج کی جو  تصویر  دیکھنے کو مل رہی ہے اس میں مقامی لوگ کم اور پولیس اہلکار زیادہ نظر آرہے ہیں۔ساتھ میں ساتھ میں آرپی ایف کی تمام چھٹیوں کو رد کردیا گیا ہے ۔اور ۷۸ اہم ریلوے اسٹیشنوں کو ہائی الرٹ پر رکھتے ہوئے سیکورٹی سخت کردی گئی ہے۔

آپ کو بتادں کہ فیصلے کے پیش نظر مرکزی حکومت نے گزشتہ کل تمام ریاستوں کو ایڈوائزری جاری کرکے کہا ہے کہ لا اینڈ آرڈر پر پینی نظررکھی جائے اور امن وامان کے ماحول کو ہرممکن بنائے رکھے۔ادھر ایودھیا ضلع کو آٹھ سیکٹر اور ۳۱ زون میں تقسیم کیا گیا ہے اور۱۶۳ حساس پوائنٹ بنائے گئے ہیں۔پولیس حکام کا کہنا ہے کہ ایک ضلع میں ۱۲۵۰ پولیس اہلکار،پانچ کمپنی پی اے سی،اور ایک کمپنی آر اے ایف کی تعینات کی گئی ہے۔اس طرح سے  نیم فوجی دستوں کی چالیس کمپنیاں تعینات ہیں اور ان کمپنیوں میں چار ہزار پیراملٹری فورس کے جوان شامل ہیں ۔خفیہ ایجنسیوں کی ٹیم بھی سادہ وردی میں ہر طرف اپنا مورچہ سنبھال چکی ہیں،ضلع امبیڈکر نگر میں قریب آٹھ عارضی جیل بنائے گئے ہیں اور گزشتہ پندرہ بیس دنوں میں قریب ۷۵ لوگوں کو جیل بھی بھیجا گیا ہے۔

وہیں یوپی پولیس نے امن وسلامتی کو یقینی بنانے کیلئے دس ایسے لیڈران کو نوٹس بھیج کر ضلع سے باہر رہنے کا حکم دیا ہے جن سے سیکورٹی انتظامیہ کو یہ خدشہ ہے کہ وہ ماحول کو خراب کرسکتے ہیں ،ان میں کچھ سابق رکن اسمبلی اورریاستی وزیر ہیں ،پولیس انتظامیہ نے نام کا انکشاف نہیں کیا ہے البتہ مانا یہ جارہا ہے کہ سابق ایم ایل اے یوگیش ورما اور سابق ریاستی وزیریعقوب قریشی کا نام اس میں شامل ہے جنہیں یہ حکم دیا ہے گیا ہے کہ وہ ضلع چھوڑ کرچلےجائیں اور اگر فیصلے کے دن وہ ضلع میں نظرآئیں گے تو انہیں گرفتار کرلیا جائے گا۔بتادیں کہ ان لوگوں پر سنگین دفعات میں مقدمے درج ہیں۔

وہیں سوشل میڈیا پر نظر رکھنے کیلئے سائبر سیل ،سرویلانس اورکرائم برانچ کی ٹیم کو لگایا گیا ہے۔ایودھیا وفیض آباد کے ۱۶۰۰ گاوں میں سولہ ہزار ولنٹیئرس سوشل میڈیا فیس بک ،واٹس ایپ ،انسٹاگرام اور ٹوئٹر پر نظر رکھے ہوئے ہیں۔ اور اس طرح سے حالات کو قابو میں رکھنے کی کوشش  کی جارہی ہے ،کل یوپی کے سی ایم یوگی آدتیہ ناتھ نے یوپی ڈی جی پی ،اسٹیٹ چیف سیکریٹری،اسٹیٹ ہوم سکریٹری  اور دیگر حکام کے ساتھ میٹنگ کرکے حالات کا جائزہ لیا اور سیکورٹی حکام کو خاص ہدایت دی کہ کسی بھی حال میں ماحول خرااب نہیں ہوناچاہیے۔

Facebook Comments