نئی دہلی:بابری مسجد رام مندر معاملے میں آج سپریم کورٹ میں سماعت کا آخری دن ہے۔گزشتہ روز سماعت کے بعد سپریم کورٹ نے ہندو فریق سے کہا تھا کہ وہ بدھ کے دن یعنی آج ۴۵ منٹ بحث کرسکتے ہیں ۔وہیں مسلم فریق کے وکیل راجیو دھون ایک گھنٹے تک آج جواب دیں گے۔چار فریقوں کو ۴۵۔۴۵منٹ ملیں گے۔بابری مسجد معاملے میں سماعت آج ہی ختم ہونے کی امید زیادہ ہے۔مولڈنگ آف ریلیف پر آج بھی سماعت ہوسکتی ہے۔منگل کو سماعت کے دوران ہندو فریق نے دلیل دی تھی کہ مغلیہ سلطنت میں بابر نے آج سے ۴۳۳ سال پہلے ایودھیا میں بھگوان رام کے مقام پیدائش پر مسجد کی تعمیر کرکے تاریخی غلطی کی تھی اور اس غلطی کے اصلاح کی ضرورت ہے۔

وہیں ہندو فریق کی طرف سے یہ بھی کہا گیا کہ ایودھیا میں بہت ساری مسجد ہے،جہاں مسلم بہت آسانی کے ساتھ عبادت کرسکتے ہیں ۔لیکن ہندو بھگوان رام کے مقام پیدائش کو نہیں بدل سکتے ۔اب دیکھنا یہ ہوگا کہ آج کا دن سوال جواب کے ساتھ کیسا رہتا ہے اور کس انداز میں جرح اپنے انجام تک پہنچی ہے۔خبر ہے کہ نومبر کے پہلے یا دوسرے ہفتے میں اس معاملے پر سپریم کورٹ کا حتمی فیصلہ آسکتا ہے۔وہیں آج سپریم کورٹ سماعت مکمل کرنے کے بعد اپنا فیصلہ محفوظ کر لے گا۔

Facebook Comments