نئی دہلی،دہلی وقف بورڈ دہلی میں ہونے والے فسادات متاثرین کی مدد میں مسلسل سر گرم ہے اور چیئرمین امانت اللہ خان کی ہدایت پر وقف بورڈ کا پورا عملہ دن رات متاثرین کی راحت رسانی اور ان کی باز آباد کاری میں لگا ہوا ہے۔عید گاہ کیمپ کے علاوہ فیلڈ میں جاکر وقف بورڈ کے افسران متاثرین کا سروے کر رہے ہیں اور نقصانات کا اندازہ لگاکر انھیں دہلی وقف بورڈ مرکزی دفتر سے اپنا کاروبار دوبارہ شروع کرنے کے لئے تعاون کیا جارہاہے۔آج شیو وہار کے اکثریتی فرقہ سے تعلق رکھنے والے ایسے ہی کئی خاندانوں کو وقف بورڈ دفتر بلایا گیاتھاجن میں سے آج تین خاندان آئے جنھیں امانت اللہ خان نے فوری طور پر اپنا کاروبار شروع کرنے کے لئے دو دو لاکھ روپیوں کا چیک دیا۔اس موقع پر متاثرین نے چیئرمین امانت اللہ خان کو فساد میں اپنی دوکانیں لوٹ لئے جانے کا درد بیان کرتے ہوئے کہاکہ پتہ نہیں ہمارا کیا قصور تھا جو ہماری دوکانوں کا سامان لوٹا گیا۔فساد متاثر رام ورن ولد جسمنت سنگھ ساکن فیس 7گلی نمبر 19نزد مدینہ مسجد شیو وہار نے بتایا کہ ان کی پرچون کی دوکان تھی جس کا سارا سامان لوٹ لیا گیا اور کاؤنٹر و فرنیچر بھی توڑ دیا گیا۔شیو وہار فیس 7کے رہنے والے مکیش ولد رام پرکاش نے بتایا کہ ان کی حلوائی کی دوکان تھی جسے لوٹ لیا گیا اور کاؤنٹر وغیرہ میں آگ لگادی گئی۔جگدیش ولد لال مہتا نے بتایا کہ ان کے گھر میں لوٹ مار کی گئی اور ان کے گھر میں رکھا ہوا جہیز کا سامان بھی لوٹ لے گئے۔وقف بورڈ کے چیئرمین امانت اللہ خان نے سب کو یقین دلایا کہ ان کا ہر ممکن تعاون کیا جائے گا اور وہ بورڈ سے دئے گئے پیسوں سے اپنا کاروبار شروع کریں۔انہوں نے مزید کہاکہ آگ لگانے والوں نے آگ لگادی اور معاشرہ میں نفرت کی دیوار کھڑی کردی،لوگوں کے مکانات اور دوکانوں کو جلا دیا گیا لیکن ہم انشاء اللہ نفرت کی آگ کو محبت کے پانی سے بجھاکر دم لیں گے۔ہم لوگوں کے آنسو پونچھنے کا کام کرتے رہیں گے۔امانت اللہ خان نے مزید کہاکہ لوگ اسی لئے ہمارا تعاون بھی کر رہے ہیں کہ ہم بنا مذہب اور ذات پات کی قید کے سب متاثرین تک پہونچنے کی کوشش کر رہے ہیں اور سب کا تعاون کر رہے ہیں۔آج بھجن پورہ سے بھی 25خاندان جن کی دوکانوں کو آگ کے حوالے کردیاگیا تھاانھیں وقف بورڈ افسران کے ذریعہ سرو ے کئے جانے کے بعد دفتر بلایا گیا تھا جن سے امانت اللہ خان نے ملاقات کی اور کاروبار دوبارہ شروع کرنے کے لئے سب کو نقد رقم دی۔امانت اللہ خان نے نقصان کے حساب سے کسی کو ایک لاکھ،کسی کو دو لاکھ،اور کسی کو تین لاکھ روپئے کی رقم نقد دی اور حوصلہ بڑھاتے ہوئے کہاکہ آپ لوگ اپنا کاروبار پھر سے شروع کریں ہم سے جتنا ممکن ہوگا ہم تعاون کریں گے۔انہوں نے مزید کہاکہ ہماری جانب سے کیا جانے والا تعاون دہلی حکومت کے علاوہ ہے۔آج فساد میں کافی بھاری بھرکم نقصان برداشت کرنے والے سعید سلمان نے بھی امانت اللہ خان سے ملاقات کی۔انہوں نے بتایاکہ ان کا کپڑو ں کا شو روم تھا جس میں کئی کروڑ کی مالیت کا سامان تھا۔سلمان کے مطابق ان کے شو روم کو آگ کے حوالے کردیا گیا جس میں انکا سب کچھ تباہ ہوگیا۔امانت اللہ خان نے ان سے 20لاکھ کے تعاون کا وعدہ کرتے ہوئے فوری طور پر انھیں 5لاکھ روپئے نقد دیئے اور ہمت بندھاتے ہوئے کہاکہ آپ کاروبار کی دوبارہ شروعات کریں ہم ہر طرح سے آپ کے ساتھ کھڑے ہیں۔چیئرمین امانت اللہ خان نے آج اپنے دفتر میں شادی و دیگر مد میں بھی کئی دیگر متاثرین کا تعاون کیا۔

Facebook Comments