کورونا وائرس اور لاک ڈاون نے پہلے ہی یہ خدشہ ظاہر کردیا تھا کہ اس کا ہندوستان کی معیشت پر بہت بڑا اثر پر سکتا ہے ،لیکن جی ڈی پی میں گراوٹ کو لیکر جو خدشہ ظاہر کیا گیا تھا اس سے کہیں زیادہ خراب تصویر دیکھنے کو ملی ہے ۔دراصل اس بار کی سہ ماہی میں جی ڈی پی نے پورے چالیس سال کے پرانے ریکارڈ توڑ دیئے ،یعنی ایک دو فیصد نہیں بلکہ منفی ۲۳ عشاریہ نو فیصد یعنی ۲۴ فیصد کی گراوٹ اس بار درج کی گئی ہے
کاورونا وائرس  کی وجہ سے ملک بھر میں نافذ لاک ڈاون سے پوری طرح متاثر ہوئی معاشی سرگرمیوں نے ہندوستان نے گروتھ ریٹ کو زبردست جھٹکا دیا ہے۔نیشنل اسٹیٹسٹیکل  آفس یعنی این ایس او کی طرف سے جاری کئے گئے اعدادوشمار کے مطابق گزشتہ مالی سال ۲۰۱۹ ۔۔۔۲۰۲۰ کی پہلی سہ ماہی میں  جی ڈی پی  گروتھ ریٹ پانچ عشاریہ دو فیصد رہی تھی ،بیشتر ریٹنگ ایجنسیوں نے  رواں مالی سال  کی پہلی سہ ماہی میں جی ڈی پی میں گرواٹ کا اندازہ لگایا تھا ۔چونکہ پچیس مارچ سے ملک بھر میں لاک ڈاون نافذ کرکے تمام معاشی سرگر میوں کو ٹھپ کردیا گیا تھا۔حالانکہ بیس اپریل کے بعد لاک ڈاون میں کچھ راحت دی جانے لگی  تھی ۔
این ایس او کے اعداد وشمار سے یہ صاف ظاہر ہورہا ہے کہ  مالی سال ۲۰۲۰۔۲۱ کی پہلی سہ ماہی میں مینوفیکچرنگ سیکٹر میں  جی وی اے یعنی گروس ویلیو ایڈیڈ مائنس ۳۹ عشاریہ تین فیصد رہا۔اور سروس سیکٹر میں منفی ۲۰ عشاریہ چھ فیصد۔۔صرف زراعت کے سیکٹر میں  تین عشاریہ چار فیصد کا اضافہ ریکارڈ کیا گیا۔کنسٹرکشن کے سیکٹر میں منفی پچاس عشاریہ تین فیصدی،بجلی میں مائنس سات فیصد اور صنعت کے شعبہ میں  جی وی اے منفی ۳۸ عشاریہ ایک فیصدی درج کی گئی ،ہوٹل کے فیلڈ میں مائنس ۴۷ فیصدی ،پبلک ایڈمنسٹریشن میں مائنس دس فیصدی اور فائننس ریئل اسٹیٹ میں مائنس پانچ عاشریہ فیصد گراوٹ درج کی گئی ہے۔
اور اس طرح سے گرواٹ کی جو مجموعی تصویر بن رہی ہے اور جو اعداد شمار  ریکارڈ ہوئے ہیں وہ مائنس ۲۳۔۹ فیصدی ہے یعنی ایک سہ ماہی میں اتنی بھاری گرواٹ چالیس سالوں میں پہلی بار دیکھنے کو ملی ہے۔اب سرکار اس کو کرونا وائرس اور لاک ڈاون کے نام پر بھناتے ہوئے امید وں کے سبز باغ ضرور  دکھانے کی کوشش کرے گی لیکن سچ تو یہ ہے کہ یہ گراوٹ ،ریکارڈ توڑ گراوٹ ہے اور اس گرواٹ کے اوپر اٹھنے میں کتنا وقت لگے گا کچھ کہا نہیں جاسکتا ۔اب چونکہ اتنا بڑا نقصان ہوا ہے تو اس کی بھرپائی کیلئے ہمیں اور آپ سب کو تیار رہنا ہوگا۔آپ سبھی کو  مالی سال ۲۰۲۰۔۲۱ کی پہلی سہ ماہی کی جی ڈی پی مبارک ہو۔

Facebook Comments