نئی دہلی:ویسٹ انڈیز کے خلاف کھیلے گئے چوتھے ونڈے میچ میں ہندوستان کے تیز گیندباز خلیل احمد نے جہاں اپنی اچھی کارکردگی کی وجہ سے لوگوں کے دلوں میں جگہ بنانے میں کامیاب ہوئے وہیں دوسری طرف ایک غلطی کے کارن ان کی خوب کھینچائی بھی ہوئی۔دراصل انہوں نے چوٹھے ونڈے میچ میں تین وکٹ لے کر بڑی کامیابی حاصل کی لیکن اس کامیابی پر جشن منانے کا طریقہ شاید غلط تھا جس پر آئی سی سی نے ان کی کلاس لگا دی۔بورڈ نے خلیل احمد کو ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی کے کارن پھٹکار لگائی۔دراصل کھیل کے دوران میدان پر موجود ویسٹ انڈیز کے کھلاڑی مارلن سیمولس کے ساتھ بد تمیزی کیلئے آئی سی سی کی طرف سے خیل احمد کو متنبہ کیا گیا ہے۔اور ان کے پوائنٹس بھی کم کیئے گئے ہیں۔آئی سی سی نے کہا کہ گیندباز خلیل احمد کو سیمولس کے ساتھ چوتھے ونڈے میچ میں بد تمیزی کرنے کیلئے باضابطہ طور پر متنبہ کیا گیا ہے اور ان کے کھاتے میں ایک ڈی میرٹ پوائنٹ بھی ڈال دیا گیا ہے۔میدان پر موجود امپائر ایان گوئلڈ،انیل چھودھری،تیسرے امپائر پال ولسن اور چوتھے امپائر شمش الدین نے خلیل احمد کو ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی کا ملزم پایا تھا ۔خلیل کو ۱۴ویں اوور میں سیمولس کے آوٹ ہونے کے بعد انہیں گندی بات کہتے ہوئے سنا گیا تھا۔انہیں کئی بار اونچی آواز میں کچھ کہتے ہوئے سنا گیا۔بتادیں کہ خلیل نے اس میچ میں ۱۳ رن دے کر تین وکٹ حاصل کئے تھے۔

Facebook Comments