نئی دہلی:قریب ایک ہفتہ سے جاری کرناٹک کا سیاسی ناٹک ابھی بھی اپنے شباب پر ہے ،ایک طرف جہاں کانگریس جے ڈی ایس اپنی سرکار بچانے کیلئے ہر ممکن کوشش کررہی ہے وہیں بی جے پی نے اپنے اراکین اسمبلی کو بھی ہوٹل میں جمع کرلیا ہے،اس بیچ کانگریس کیلئے آج بڑی خبر یہ رہی ہے کہ باغی اراکین اسمبلی میں سے ایک رکن ایم ٹی بی ناگاراج نے اپنا استعفیٰ واپس لینے کا اعلان کردیا ہے۔کانگریس لیڈر ڈی کے شیو کمار کے مسلسل محنتوں کے نتجیے میں آج ناگاراج نے اپنا من بدل لیا ہے ،وہیں دوسری طرف کانگریس جے ڈی ایس لگاتار کوشش کررہی ہے کے باغی اراکین اسمبلی سے رابطہ کرکے منایا جاسکے،خبر ہے کہ سنیچر کی رات کو سی ایم کمل ناتھ اور غلام نبی آزاد بنگلورو پہنچیں گے جہاں سرکار بچانے کی حکمت عملی تیار کی جائے گی ۔دیکھنا دلچسپ ہوگا کہ کانگریس کے باغی لیڈران میں سے کتنے لیڈراپنا استعفیٰ واپس لینے کیلئے راضی ہوتے ہیں اور کتنے بی جے پی کی طرف جاتے ہیں،ایسے میں عدالت کا فیصلہ کمارسوامی کی سرکار پر بڑا فیصلہ ہوگا،اگر جن اراکین کا استعفیٰ اسپیکر نے نامنظور کیا ہے ،عدالت نے بھی نامنظور کردیا پھر کھیل دوسرا ہوجائے گا،اس کیلئے منگل کے دن کا پورے کرناٹک اور کانگریس بی جے پی کو انتظار ہے،لیکن یاد رکھنے والی بات یہ ہے کہ بی جے پی نے بھی اپنے اراکین اسمبلی کو ایک ہوٹل میں جمع کرلیا کہ کہیں ان کے لیڈران کو کانگریس جے ڈی ایس کی طرف سے توڑنے کی کوشش نہ کی جائے۔

Facebook Comments