نئی دہلی:اپنی قدرتی خوبصورتی کیلئے مشہور معروف جموں کشمیر ان دنوں سیاحوں کی آمد کیلئے پوری شدت کے ساتھ منتظر ہے،لیکن سیاح اب کشمیر جانے سے پہلے کئی بار سوچ رہے ہیں جس کا اثر وہاں کی سیاحت پر سیدھے طورپر پڑتا نظر آرہا ہے،انتظامیہ کا کہنا ہے کہ اس سال جون تک محض دو لاکھ پانچ ہزار سیاح ہی وادی کی سیروسیاحت کیلئے آئے ہیں جبکہ سال کے اخیر تک دس لاکھ سیاحوں کی آمد کا امکان ہے،وہیں انتظامیہ کا کہنا ہے کہ ہم سیاحتی مقامات کی مزید تزئین کاری پر دھیان دے رہے ہیں تاکہ سیاحت کا کاروبارزیادہ سے زیادہ تیزی کے ساتھ آگے بڑھ سکے۔وہیں دوسری جانب آج جموں کشمیر کے گورنر ستیہ پال ملک نے دہلی کی میڈیا پر بڑا الزام لگاتے ہوئے کہا کہ دہلی کی میڈیا نے جموں کشمیر کی تصویر بہت ہی غلط انداز میں پیش کی ہے،کشمیر کی جو اصلیت ہے اس پر دہلی کی میڈیا نے پردہ ڈالتے ہوئے صرف ملیٹنسی وغیرہ پر فوکس رکھا جس کی وجہ سے جموں کشمیر کی سیاحتی صنعت کو بہت زیادہ نقصان ہوا ہے اور سیاحوں کی تعداد میں کافی کمی درج کی گئی ہے جس کی وجہ سے وادی کا کافی بڑا نقصان ہوا ہے۔گورنرملک نے سیدھے طورپر کہا کہ دہلی کی میڈیا نے کشمیر کی اصل تصویر پیش کرنے کے بجائے ایک ایسی شبیہ پیش کرنے کی کوشش کی جس کا سیاحوں پر کافی منفی اثرپڑا ہے اور نتیجے میں سیاحوں کی وہ تعداد جموں کشمیرنہ آسکی جو عام طورپر آتی رہی ہے،یہی کارن ہے کہ یہاں کی سیاحتی صنعت کا کافی نقصان کا سامنا کرنا پڑرہا ہے۔

Facebook Comments