نئی دہلی:لاک ڈاون کے بیچ بڑی تعداد میں لوگ ایک ریاست سے دوسری ریاست میں پھنسے ہوئے ہیں ۔کچھ مزدروں اور طلبا کی گھر واپسی ہوچکی ہے،ٹرین اور بس سروس کا آغاز ہوچکا ہے جو صرف اور صرف ریاستی سرکارکی ہدایت کے بعد ہی پھنسے ہوئے لوگوں کو اپنے آبائی ریاست کیلئے استعمال کیا جارہا ہے ۔اس بیچ کچھ ریاستوں میں کئی قسم کے فارم اور اپلیکشن سوشل میڈیا میں وائرل ہورہے ہیں اور لوگوں سے کہا جارہا ہے کہ وہ اپنے شہر اور ریاست اگر لوٹنا چاہتے ہیں تو اس فارم کو بھریں۔ایسے میں سمجھنے اور یاد رکھنے والی بات یہ ہے کہ اس موقع سے دھوکہ دری کرنے والا گروہ کافی سرگرم ہے جو اس نازک موقع سے آپ کی جانکاری خاص طور پر آدھار کارڈ اور موبائل نمبر وغیرہ جمع کرکے اس کا غلط استعمال کرسکتے ہیں ،اس لئے ضرورت ہے کہ زیادہ سے زیادہ محتاط رہیں ۔

اگر آپ کے پاس کوئی فارم یا اپلیکشن آتا ہے تو سب سے پہلے اس فارم کے سلسلے میں اپنی ریاست سے منسلک آفیشیل ویب سائٹ پر اس کو دیکھیں ،وہاں نہ ملے تو پھر ٹوئٹر اکاونٹ دیکھیں ،وہاں بھی نہ ملے تو ڈیزاسٹر منجمنٹ کی ویب سائٹ اور ٹوئٹر پر دیکھیں ،اگر نہ ملے تو پھر آپ اپنے پاس کے پولیس تھانہ میں معلوم کریں کی کیا کوئی فارم جمع کروایا جارہا ہے۔ان تمام جگہوں سے اگر جواب مثبت آتا ہے تب جاکر فارم جمع کریں بصورت دیگر یہ فرضی  فارم ہوگا جو آپ کی خفیہ جانکاری  پر نظر رکھنے اور اس کا غلط استعمال کرنے کیلئے بھروایا جارہا ہے۔ایسے میں آپ کو فارم بھرنے سے پہلے کافی زیادہ چھان بین کرنے کی ضرورت ہے۔

Facebook Comments