نئی دہلی:کانگریس کی جنرل سکریٹری پرینکا گاندھی نے آج کشمیر کے مسئلے پر ایک بڑا بیان دیا ہے۔انہوں نے ٹوئٹ کرکے مودی سرکار پر نشانہ لگایا ہے۔انہوں نے کہا کہ مرکزی سرکار نیشنلزم کے نام پر لاکھوں کشمیریوں کی آواز کو دبانے کی کوشش کررہی ہے ،انہوں نے سرکار سے یہ سوال بھی کیا کہ آخر یہ سلسلہ کب تک چلے گا،ساتھ میں انہوں نے یہ بھی کہا کہ اس پورے معاملے پر اپوزیشن کو نشانہ بنارہے ہیں ،انہیں چاہیے کہ وہ اس مسئلے کو سیاسی رنگ نہ دیں ۔

پرینکا گاندھی نے ایک دوسرے ٹوئٹ میں ایک ویڈیو کلپ شیئرکی ہےجس میں کشمیر کی ایک خاتون راہل گاندھی سے فلائٹ کے اندر روتے ہوئے اپنا درد بیان کررہی ہے،پرینکا گاندھی نے اس ویڈیو کے ساتھ لکھا ہے کہ اس سے زیادہ سیاست اور ملک مخالف قدم نہیں ہوسکتا کہ آپ کشمیر کی عوام کے تمام جمہوری حقوق پر پابندی لگادیں۔یہ ہم سب کی ذمہ داری ہے کہ ہم کشمیر کی عوام کی آواز بنیں اور ان کے حق میں آواز بلند کریں ،اور ہم ایسا کرنے سے گریز نہیں کریں گے۔

آپ کوبتادیں کہ ایک روز قبل کانگریس سابق صدر راہل گاندھی کی قیادت میں اپوزیشن کا ایک وفد سرینگر پہنچاتھا تاکہ جموں کشمیر کی موجودہ صورتحال کا جائزہ لے سکیں،لیکن ان تمام لیڈران کو سرینگر ایئرپورٹ سے باہرنہیں جانے دیابلکہ وہیں سے واپس دہلی لوٹا دیاگیا،جس کے بعد راہل گاندھی نے کہا کہ ریاست میں کچھ بھی معمول پر نہیں ہے،وہیں غلام نبی آزاد نے کہا کہ اخیر کچھ تو ہے جس کی پردہ داری ہے،مرکزی سرکار ملک سے کشمیر کے دردناک صورتحال کو چھپانے کی کوشش کررہی ہے۔

Facebook Comments