کانگریس جنرل سکریٹری پرینکا گاندھی اپنی بوٹ سے گنگا یاترا کے پہلے دن پریاگ راج پہنچی ،دمدمہ گھاٹ کے کنارے انہوں نےایک انتخابی جلسہ سے خطاب کرتے ہوئے عام عوام سے سیدھی بات کی۔پرینکا گاندھی نے کہا کہ گزشتہ کچھ سالوں میں کسانوں کو کافی مشکلات کا سامنا کرنا پڑا ہے،چونکہ مرکز کی سرکار اپنے صنعتکار دوستوں کا قرض معاف کرنے میں اتنی مشغول تھی کہ اس کو ہندوستان کا کسان نظر ہی نہیں آیا۔انہوں نے پی ایم مودی کے چوکیدار مہم پر حملہ کرتے ہوئے کہا کہ چوکیدار امیروں کے ہوتے ہیں ،کسانوں کے چوکیدار نہیں ہوتے ہیں ۔کسانوں کو اس کی ضرورت نہیں ہوتی ،کسان خود ہی اپنے چوکیدار ہوتے ہیں اور اس ملک کی چوکیداری کسان ہی کرسکتا ہے۔

پرینکا گاندھی نے کہا کہ آج ملک ایک مشکل وقت سے گزر رہا ہے ۔ملک کی آئین پر خطرہ منڈلا رہا ہے ،اسی وجہ سے میں گھر سے باہر نکلنے پر مجبور ہوئی ہوں۔میں کافی سالوں سے گھر میں تھی ،لیکن اب ملک مشکل میں ہے،آج کسانوں کے فصلوں کا دام صحیح نہیں مل رہا ہے،گزشتہ پانچ سالوں میں ملک کے اندر بے روزگاری کافی تیزی کے ساتھ بڑھی ہے۔انہوں نے عوام سے اپیل کی کہ راہل گاندھی کو مضبوط کرنے کیلئے کانگریس کو ووٹ کیجیے اور جیت دلائیے۔

وہیں دوسری طرف مایاوتی اور اکھلیش یادو کو بھی دوٹوک جواب دیتے ہوئے کہا کہ ہم کوئی کنفیوژن نہیں پیدا کررہے ہیں ،ہماری لڑائی سیدھے بی جے پی سے ہے اور بھاجپا کو ہرانا ہی ہمارا مقصد ہے،بتادیں کہ مایاوتی اور اکھلیش نےآج ٹوئٹ کر کہا ہے کہ اترپردیش میں ہمارا کانگریس سے کوئی اتحاد نہیں ہے اس لئے کانگریس راجیہ میں کوئی کنفیوژن نہ پھیلائے ،پرینکا نے اسی کا جواب دیتے ہوئے کہا کہ ہم کوئی کنفیوژن نہیں پھیلا رہے ،ہماری لڑائی صرف بی جے پی کو ہرانے کیلئے ہے۔

Facebook Comments