نئی دہلی:آسام میں شہریت تحفظ بل 2016 کی مخالفت میں ٹی ایم سی اور اے آئی یو ڈی ایف کے اراکین پارلیمنٹ نے مظاہرہ کیاہے۔وہیں اس بل کے خلاف پارلیمنٹ کے باہر ترنمول کانگریس اراکین پارلیمنٹ نے بہت ہی انوکھے انداز میں مظاہرہ کیا،تمام مظاہرین میں سے ایک رکن پارلیمنٹ کے چہرے پر پی ایم مودی کا مکھوٹا لگا ہوا تھا جو ایک چھڑی سے بقیہ تمام اراکین پارلیمنٹ کی چھڑی سے پٹائی کررہے ہیں۔

آپ کو بتا دیں کہ اس بل کے مطابق شہریت حاصل کرنے کیلئے رہنے کی مدت گیارہ سال سے کم کرکے چھ سال کی تجویز پیش کی گئی ہے،اس کے ساتھ ہی افغانستان،بنگلہ دیش اور پاکستان کے ہندوں ،سکھوں اور بودھ،جین،پارسی اور عیسائیوں کو بغیر اصلی دستاویز کے ہندوستان کی شہریت دینے کی تجویز بھی اس بل میں شامل ہے۔ٹی ایم سی اراکین پارلیمنٹ اس بل کی مخالفت اس لئے کر رہے ہیں چونکہ ان کا کہنا ہے کہ اس سے آسام کے اندر مقامی اور اصلی شہریت کے حقوق اوراس کے پہچان کا مسئلہ کھرا ہوجائے گا،باہر سے کون آئے ہیں اور یہاں کے حقیقی شہری کون ہیں اس کی تمیز ختم ہوجائے گی ۔بل کی مخالفت کرنے والی پارٹیوں میں کانگریس،ٹی ایم سی،سی پی آئی ایم،ایس پی کے ساتھ ساتھ بی جے پی کی دو معاون پارٹیوں کے نام بھی شامل ہیں۔

Facebook Comments