نئی دہلی:شہریت ترمیمی بل کے خلاف گزشتہ کئی روز سے آسام اورشمال مشرقی ریاستوں میں زبردست احتجاج ومظاہرہ جاری ہے،اور راجیہ سبھا سے اس بل کی منظوری کے بعد یہ احتجاج ومظاہرے پرتشدد وگئے ہیں ،اور آسام کے گوہاٹی میں مظاہرین پر پولیس کی طرف سے فائرنگ کی بھی خبریں ہیں جس میں دو لوگوں کی موت واقع ہوچکی ہے۔گوہاٹی میڈیکل کالج اور اسپتال کے ایک افسر نے بتایا کہ ایک شخص مردہ حالات میں لایا گیا جبکہ ایک دوسرے شخص کی موت علاج کے دوران ہوئی۔
شہریت ترمیمی بل کے خلاف آسام میں ہزاروں کی تعداد میں لوگ کرفیوکی خلاف ورزی کرتے ہوئے سڑکوں پر اتر آئے ہیں اور پولیس کے ساتھ جھڑپ بھی ہوئی ہے۔حالانکہ آسام کے گورنر نے مظاہرین سے امن و سکون کی بحالی کی اپیل کی ہے لیکن پھر بھی اس کا کوئی اثر ہوتا دکھائی نہیں دے رہا ہے،اس بیچ گوہاٹی سے آسام کیلئے تمام ٹرینیں اور پروازیں بھی رد کی جاچکی ہیں ،امتحانات ملتوی کئے جاچکے ہیں ،انٹرنیٹ اور ایس ایم ایس کی سروس معطل کی جاچکی ہیں اور بڑے پیمانے پر آرمی جگہ جگہ تعینات کی جاچکی ہے لیکن پھر بھی آسام میں مظاہرین پیچھے ہٹتے نظر نہیں آرہے ہیں۔

Facebook Comments