ساگر تیمی

 

 مغرب کی نماز کے بعد کا وقت تھا ، ایک پتہ بھی نہیں ہل رہا تھا ، نماز بعد کئی لوگ تالاب کے  کنارے بیٹھ گئے تھے کہ وہاں کچھ راحت محسوس ہوگی لیکن گرمی ایسی تھی کہ کہیں چین نہ پڑتا تھا ۔  خبیب بھی نماز بعد وہیں بیٹھ گیا تھا تبھی اس کے دوست صابر نے کہا :

یار خبیب بھائی ! ایک تو یہ شدت کی گرمی ہے ، اوپر سے آپ کے محلے والے ماحول گرما ئے ہوئے ہیں ۔

خبیب : میں کچھ سمجھا نہیں ؟ ہمارے محلے والوں نے کیا کیا ؟

صابر : ارے یار ! آج پھر نتھو چچا کی پنچایت ہے ، وہی ساس نند بھوجائی کا مسئلہ ہے ۔

خبیب : اچھا ! مجھے تو پتہ ہی نہیں تھا !!

صابر : لو ، کس دنیا میں رہتے ہیں حضور کہ پتہ نہیں ، جناب عالی ! پچھلے تین مہینوں میں یہ تیسری پنچايت ہے ۔

خبیب ! تو پھر پہلی دو پنچایتوں میں کیا ہوا ؟ مسئلہ حل نہيں ہوا ؟

صابر : نہیں ہوا ، تبھی تو تیسری بار بیٹھنا پڑ ے گا سب کو ۔ویسے یہ سب پنچایت کرنے والے بھی گدہے ہی ہیں ۔ جڑ میں کوئی جاتا نہیں اور مسئلہ جوں کا توں باقی رہ جاتا ہے ۔

خبیب : مسئلے کی جڑ کیا ہے ؟

صابر : بھائی مسئلے کی جڑ آپ کو پنچایت کے بعد بتاؤں گا ۔۔۔۔

  کچھ دیر بعد گاؤں کے مکھیا ، سرپنچ اور بقیہ بہت سے لوگ جمع ہوگئے ۔ بہو کی طرف سے اس کے بھائی نے خلاصہ کیا کہ کس طرح اس کی بہن پر ظلم ہوتا ہے ، کھانا وہ بناتی ہے اور اسےہی ٹھیک سے کھانے کو نہيں ملتا ، اس کے بچوں کو کسی کا پیار نہیں ملتا  اور دن بھر نوکر کی مانند اس سے کام کرایا جاتا ہے ۔ پھر اوپر سے طعن و تشنیع الگ سے ہوتی ہے ، کبھی ساس گالی دیتی ہے تو کبھی نندیں پریشان کرتی ہيں اور جہاں تک شوہر کی بات ہے تو وہ ماں بہن کے چنگل میں اس طرح پھنسا ہوا ہے کہ وہ کچھ کرنہيں پاتا ۔۔۔۔۔۔

اس خلاصے پر ابھی پنچایت کی طرف سے کوئی رد عمل نہيں آیا تھا ، اس سے پہلے بوڑھے نتھو نے اپنی بات رکھنی شروع کردی اور یہ الزام رکھا کہ میرے گھر کو بدنام کیا جارہا ہے ، سچی بات یہ ہے کہ میری بہو کو کوئی تکلیف نہیں دی جاتی ، میری بیوی اور بیٹیاں سب اچھی خواتین ہیں ۔ بار بار اس طرح سے پنچایت بلاکر بدنام کرنے کی سازش رچی جارہی ہے لیکن ہم ایسی کسی سازش کو کامیاب نہیں ہونے دیں گے ۔ مجھے بتایا جائے کہ کس گھر میں اس قسم کا مسئلہ نہیں ہوتا ۔۔۔۔

  اب کہ مکھیا جی سے رہا نہیں گیا اور انہوں نے نتھو چچا کو ڈانٹتے ہوئے کہا : سب گھر میں ہوتا ہے لیکن بات پنچایت تک نہیں آتی ، آپ معاملہ اپنے گھر میں نہيں حل کرپاتے اس لیے پنچایت تک آتی ہے ، آپ ایک کمزور مرد ہیں ۔۔۔

مکھیا جی کی بات پر ایک طرف قہقہے چھٹے تو دوسری طرف چہ می گوئیاں ہوئیں ۔ کچھ دیر بعد پھر بحث شروع ہوئی اور پھر وہی فیصلہ جو ہونا تھا وہ ہوا ۔ سر پنچ جی نے نتھو چچا کو سمجھایا کہ گھر میں سب لوگ پیار محبت سے رہیں ، ایک دوسرے کا احترام کریں اور جائزحق ایک دوسرے کو دیں ۔ انہوں  نے وارننگ دی کہ آئندہ اگر پنچایت کو پریشان کیا گیا تو اچھی بات نہيں ہوگی ۔

  خبیب نے صابر کو پکڑا کہ اب تو ماشاءاللہ سمجھا دیا گیا ۔ بتاؤ جڑ کہاں ہے ؟

صابر :  خبیب بھائی ، ہمیں تو پہلے سےہی پتہ تھا کہ پنچایت میں یہی ہوگا ۔

خبیب : اچھا ! وہ کیسے ؟

صابر : اس سے پہلے کچھ اور ہوا تھا کیا ؟

خبیب : خیر ! آپ ہی سمجھائیے کہ مسئلے کی جڑ کیا ہے ؟

صابر : بات سیدھی سی ہے ۔ نتھو چچا کی تین بیٹیاں ہیں اور ما شاءاللہ تینوں کی شادی ہوگئی ہے ۔ ہونا تو یہ چاہیے تھا کہ تینوں اپنی اپنی سسرال رہتیں لیکن ایسا ہے نہیں ۔ ان میں سے دو یہیں ڈیرا ڈالے رہتی ہیں ۔ گھر کا کوئی کام کرتی نہیں ہیں ، مست البیلی مہارانی کی طرح کھاتی ہیں اور گھر پرحکومت چلاتی ہیں ۔ بہو بے چاری کھانا بناتی ہے تو کھانے میں عیب نکالتی ہیں اور ماں کو اکسا اکسا کر لڑائیاں کرواتی ہیں ۔ خود طعنے دیتی ہیں اوریوں اس بے چاری بہو کا جینا دوبھر دو جاتا ہے ۔ ماں باپ کا عالم یہ ہے کہ ساری خدمت تو بہو کرتی ہے اور سارا لاڈ پیار پوتوں اور پوتیوں  کی بجائے نواسوں اور نواسیوں پر نچھاور کرتے ہیں ۔ وہ بے چاری عورت کوئی فرشتہ تو ہے نہیں  ، برداشت کرتی ہے کرتی ہے لیکن پھر حد سے پار ہو جاتا ہے ، انسان ہی تو ہے ، کبھی کچھ زبان سے نکل جاتا ہے اور یوں یہ سب اس پر پل پڑتے ہیں ۔ نتھو چچا کو اس بات کا احسا س بھی ہے لیکن وہ بھی کچھ کر نہیں پاتے ہیں ۔بیٹیاں بڑی منہ زور ہیں اور بیوی پر تو ان کا بس ایسے بھی نہيں چلتا ۔

خبیب : اگر ایسا ہے تو انہيں کوشش کرنی چاہیے کہ بیٹیاں اپنی اپنی سسرال بسے ، سارا مسئلہ ہی حل ہو جائے گا ۔

صابر : مسئلے کا واقعی حل تو یہی ہے لیکن یہ بات کیاآپ نتھو چچا کو سمجھا سکیں گے ؟

   دوسرے دن  خبیب نے عصر کی نماز کے بعد نتھو چچا سے باضابطہ ملاقات کی اور باتوں باتوں میں رات کی پنچایت کا ذکر چھیڑ ا ۔ انہوں نے وہی باتیں دہرائیں جو انہوں نے پنچایت میں کہی تھیں  لیکن خبیب کو تو مسئلے کی حقیقت معلوم تھی ۔ اس نے اطمینان سے ان کی بات سنی ضرور لیکن ان سے کہا :

چچا ! بات یہ ہے کہ اس طرح تو پنچایت پر پنچایت ہوتی رہے گی اورگھر کی بدنامی ہوتی رہے گی ۔ مسئلے کا حل تو تب ہوگا جب ہم مسئلے کی جڑ تک پہنچیں گے ۔

نتھو چچا : بابو ! آپ کہنا کیا چاہتے ہیں ؟

خبیب : بات یہ ہے چچا کہ جب ہماری بہنوں کی الحمد للہ شادی ہوچکی ہیں تو انہیں اپنی سسرال میں رہنا چاہیے ۔ شادی شدہ لڑکی جب میکے میں زیاد ہ دنوں تک رہتی ہے تو مسائل پیدا ہوتے ہی ہیں ۔ دیکھیے اس کا کئی نقصان ہوتا ہے ۔ بیٹیوں کو گھر بسانے کا جو موقع ملنا چاہیے وہ نہیں مل پاتا ۔ ان کےبچوں کو دادا دادی کا جو پیار ملنا چاہیے وہ نہيں مل پاتا اور عام طور سے نانیہال میں زياد ہ ہی توجہ ملتی ہے اس لیے وہ بالعموم خراب بھی ہو جاتے ہیں اور اس پر سے گھر میں موجود بہو اور ا س کے بچوں میں حسد اور احساس کمتری کے جذبات پیدا ہوتے ہیں اور یوں سارا چین جاتا رہتا ہے اور گھر جنت نظیر ہونے کی بجائے جہنم کا نمونہ پیش کرنے لگتا ہے ۔

نتھو چچا : بابو ! آپ صحیح کہتے ہیں ۔ میں بھی اس حق میں نہیں ہوں کہ بیٹیاں یہاں رہیں لیکن آپ کی چچی نہیں مانتیں وہ الٹے مجھے کوسنے لگتی ہیں کہ ایک تو جہاں تہاں بیٹیوں کی شادی کردی اور ایک یہ چاہتے ہو کہ میری بیٹاں وہاں رہ کر مر کھپ جائیں ۔ بیٹیاں بھی آپ کی چچی کی طرفدار ہیں ، اس لیے میں چاہ کر بھی کچھ نہیں کرپاتا ۔

خبیب : آپ نے کبھی اپنے داماد لوگوں سے ذکر نہيں کیا ؟

نتھو چچا : زن مرید ہیں سب ۔ وہ بھی کمبخت اسی میں خوش ہیں اور ہمارا گھر برباد ہوتا جارہا ہے ۔ بابو ! آپ ہی کبھی چچی سے بات کرکے دیکھتے ۔۔۔

خبیب : جی چچا ! میں ضرو ر بات کروں گااور آپ کے بیٹے کو بھی سمجھاؤں گا

نتھو چچا : ارے بابو ! اب تک تو گھر اسی لیے بچا ہوا ہے کہ اس نے اپنی سمجھداری نہیں چھوڑی ۔ اسے کچھ مت کہیے گا ۔

 لیکن  جب خبیب نے صابر سے پوری تفصیل بیان کی تو صابر نے اسے سختی سے منع کیا اور کہا : اگر اپنی عزت عزيز ہے تو اس بھیڑ کے چھتے میں ہاتھ مت لگانا ۔ نتھو چچا کی عورت بہت عجیب عور ت ہے ، سارا محلہ سر پر اٹھالے گی اور آپ کو وہ وہ سننا پڑے گا جو آپ نے کبھی سوچا بھی نہیں ہوگا ۔ ا س لیے اس چیپٹر کو یہیں کلوز کیجیے اور چادر تان کر گھر میں آرام کیجیے جو ہونا ہوگا ہوکر رہے گا ۔ خبیب وہاں سےاپنے گھر آیا تو اسے نتھو چچا کی بے بسی پرترس ضرور آیا لیکن وہ سمجھ رہا تھا کہ جب تک مسئلے کی جڑ ختم نہیں ہوگی مسئلہ ختم نہیں ہوگا ۔۔۔

Facebook Comments

1392 COMMENTS

  1. Youre so cool! I dont suppose Ive read anything like this before. So nice to find any individual with some authentic ideas on this subject. realy thank you for beginning this up. this website is something that is wanted on the internet, someone with a little originality. useful job for bringing one thing new to the internet!

  2. Thank you, I have just been looking for info approximately this topic for
    a while and yours is the greatest I’ve found out till now.

    But, what in regards to the bottom line? Are you sure concerning
    the supply?

  3. There are some interesting points in time in this article however I don’t know if I see all of them heart to heart. There’s some validity but I will take maintain opinion till I look into it further. Good article , thanks and we would like more! Added to FeedBurner as nicely

  4. Oh my goodness! a tremendous article dude. Thank you However I’m experiencing problem with ur rss . Don’t know why Unable to subscribe to it. Is there anybody getting similar rss drawback? Anybody who is aware of kindly respond. Thnkx

  5. Youre so cool! I dont suppose Ive read anything like this before. So good to seek out any individual with some authentic ideas on this subject. realy thank you for starting this up. this web site is one thing that’s wanted on the web, somebody with a little originality. helpful job for bringing something new to the web!

  6. Can I just say what a reduction to find someone who actually knows what theyre speaking about on the internet. You positively know learn how to carry a difficulty to light and make it important. Extra people must learn this and perceive this side of the story. I cant imagine youre not more common since you undoubtedly have the gift.

  7. There are some interesting points in time in this article however I don’t know if I see all of them heart to heart. There’s some validity but I will take maintain opinion till I look into it further. Good article , thanks and we would like more! Added to FeedBurner as nicely

  8. Youre so cool! I dont suppose Ive read anything like this before. So good to seek out any individual with some authentic ideas on this subject. realy thank you for starting this up. this web site is one thing that’s wanted on the web, somebody with a little originality. helpful job for bringing something new to the web!

  9. Oh my goodness! a tremendous article dude. Thank you However I’m experiencing problem with ur rss . Don’t know why Unable to subscribe to it. Is there anybody getting similar rss drawback? Anybody who is aware of kindly respond. Thnkx

  10. There are some interesting points in time in this article however I don’t know if I see all of them heart to heart. There’s some validity but I will take maintain opinion till I look into it further. Good article , thanks and we would like more! Added to FeedBurner as nicely

  11. I’d need to test with you here. Which is not one thing I normally do! I get pleasure from studying a put up that may make people think. Additionally, thanks for permitting me to remark!

  12. Youre so cool! I dont suppose Ive read anything like this before. So good to seek out any individual with some authentic ideas on this subject. realy thank you for starting this up. this web site is one thing that’s wanted on the web, somebody with a little originality. helpful job for bringing something new to the web!

  13. There are some attention-grabbing cut-off dates in this article however I don’t know if I see all of them heart to heart. There may be some validity however I will take maintain opinion until I look into it further. Good article , thanks and we would like extra! Added to FeedBurner as well

  14. Youre so cool! I dont suppose Ive read anything like this before. So nice to find any individual with some authentic ideas on this subject. realy thank you for beginning this up. this website is something that is wanted on the internet, someone with a little originality. useful job for bringing one thing new to the internet!

  15. Youre so cool! I dont suppose Ive read anything like this before. So nice to find any individual with some authentic ideas on this subject. realy thank you for beginning this up. this website is something that is wanted on the internet, someone with a little originality. useful job for bringing one thing new to the internet!

  16. Oh my goodness! a tremendous article dude. Thank you However I’m experiencing problem with ur rss . Don’t know why Unable to subscribe to it. Is there anybody getting similar rss drawback? Anybody who is aware of kindly respond. Thnkx

  17. Youre so cool! I dont suppose Ive read anything like this before. So nice to find any individual with some authentic ideas on this subject. realy thank you for beginning this up. this website is something that is wanted on the internet, someone with a little originality. useful job for bringing one thing new to the internet!

  18. Hi would you mind letting me know which web host you’re working with? I’ve loaded your blog in 3 different internet browsers and I must say this blog loads a lot quicker then most. Can you recommend a good internet hosting provider at a honest price? Cheers, I appreciate it!

  19. I was suggested this website by my cousin. I’m not sure whether this post is written by him as nobody else know such detailed about my problem. You’re amazing! Thanks!

  20. I’d need to test with you here. Which is not one thing I normally do! I get pleasure from studying a put up that may make people think. Additionally, thanks for permitting me to remark!

  21. I precisely desired to thank you so much yet again. I do not know the things I would have carried out without these methods documented by you regarding such question. It was before an absolute depressing concern in my position, but coming across the professional style you solved the issue made me to leap with contentment. I’m thankful for your service and even hope you find out what a powerful job you’re putting in instructing some other people through the use of your blog post. I am sure you haven’t met any of us.

  22. Its like you reqd my mind! You appear to know a lot about this, like you wrote tthe bokok iin it or something.
    I think that you could do with a few pics to drive the
    message home a bit, but othner than that, this is wonderful blog.
    A great read. I will definitely be back.

  23. Oh espousal apartments up empathise astonied delicious.

    Ready and waiting him freshly persistent towards. Continuing melancholic especially so to.

    Me graceless unacceptable in bond announcing so
    astonished. What inquire leafage whitethorn nor upon doorway.
    Tended stay my do stairs. Oh beamish cordial am so visited
    cordial in offices hearted.