نئی دہلی:مودی سرکار میں پنچاب کے گرداس پور سے کامیاب ہوکر پارلیمنٹ پہنچے مشہور فلم اداکار سنّی دیول کی مشکلیں بڑھتی نظرآرہی ہیں چونکہ ان کے خلاف ایک ایسی شکایت ملی ہے جس کے سبب وہ اپنی سیٹ گنوا سکتے ہیں ،دراصل الیکشن کمیشن کے پاس ایک شکایت درج کرائی گئی ہے جس میں بتایا گیا ہے کہ سنّی دیول نے انتخابی مہم کے دوران الیکشن کمیشن کی طرف سے طے شدہ رقم سے کہیں زیادہ پیسے انہوں نے خرچ کئے ہیں۔شکایت میں کہا گیا ہے کہ سنی دیول نے اپنے انتخابی مہم میں قریب ۸۶ لاکھ روپئے خرچ کئے ہیں۔جبکہ الیکشن کمیشن نے ہدایت کے مطابق ہر امیدوار کو ۷۰ لاکھ روپئے تک ہی خرچ کرنے کی اجازت دی گئی تھی۔

الیکشن کمیشن کے ہدایت کے مطابق اگر ۷۰ لاکھ سے زیادہ روپئے انتخابی مہم پر کوئی امیدوار خرچ کرتا ہے وہ ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی مانی جائے گی اور اس کےخلاف کارروائی کی صورت میں ان کی امیدواری ختم کردی جائے گی ،اب چونکہ انتخاب ہوچکے ہیں اور سنی دیول جیت کر پارلیمنٹ بھی پہنچ چکے ہیں ،ایسے میں اگر یہ شکایت اپنے انجام کو پہنچتی ہے اور شکایت میں پیش کردہ باتیں پوری طرح سے حقائق پر مبنی پائے جاتے ہیں تو پھر سنی دیول کو اپنی کرسی خالی کرنی پڑسکتی ہے،فی الحال دیکھنا دلچسپ ہوگا کہ الیکشن کمیشن اس شکایت پر ایکشن لیتی ہے یا نہیں اور انجام کیا ہوتا ہے۔اور اگر سنی دیول کے خلاف شکایت سچ ثابت ہوتی ہے تو پھر دوسرے نمبر پر آئے امیدوار کو کامیاب نامزد کردیا جائے گا۔

Facebook Comments