نئی دہلی،مرکزی سرکار  ملک میں روزگار کے مدعے پر پوری طرح سے لاجواب ہوتی نظر آرہی ہے۔اپوزیشن کے لیڈران بھی روزگا کے مسئلے پر مودی سرکار کو گھیرنے کی کوشش میں ہے،دراصل حال ہی میں این ایس ایس او کی ایک رپورٹ لیک ہونے کے سبب بڑا انکشاف ہوا ہے،جس کے مطابق گزشتہ پانچ سالوں کے اندر4.3 کروڑ نوکریاں ختم ہوئی ہیں۔اس سلسلے میں ایک ٹی وی چینل پر جب مرکزی وزیر وی کے سنگھ سے سوال کیا گیا تو انہوں نے عجیب وغریب جواب دیا جس نے اپوزیشن کو ایک اہم عنوان بھی دے دیا ہےجس پر بحث کرانے اور انتخابی موضوع بنانے کی کوشش ہوگی۔جب وی کے سنگھ سے روزگار کے سلسلے میں سوال کیا گیا تو انہوں نے کہا کہ ملک میں نوکریاں دو حصوں میں ہوتی ہیں ،ایک آرگنائز سیکٹر میں جبکہ  دوسرا غیر ارگنائز سیکٹر میں۔اور 90 فیصدی کام غیر منظم سیکٹر میں ہوتا ہے،اعداد وشمار تو توڑ مروڑ کر پیش کیا جاسکتا ہے۔سرکار کے ہر سال دو کروڑ لوگوں کے روزگار دینے کے سوال پر وی کے سنگھ نے کہا کہ سرکار کے اندر نوکریاں نہیں ہیں۔اب آپ چاہیں کہ جوائنٹ سکریٹری بن جائیں تو یہ ممکن نہیں ہے۔

بتادیں کی اس رپورٹ سے انکشاف ہوا ہے کہ مرد صاحب روزگار کی تعداد میں کمی آرہی ہے۔رپورٹ میں یہ بھی بتایا گیا ہے کہ پچھلے پانچ سالوں کے اندر ملک کے اندر روزگار میں کافی کمی درج کی گئی ہے۔بتا دیں کہ سرکار نے فی الحال اس رپورٹ کو شائع  کرنے پر پابندی لگا دی ہے۔


Facebook Comments