نئی دہلی،دہلی وقف بورڈ نے شمال مشرقی دہلی کے فساد متاثرین کی باز آبادکاری اور راحت رسانی کے کام کی نگرانی کے لئے ایک اعلی سطحی کمیٹی کی تشکیل دی ہے جس کے چیئرمین بورڈ کے چیئرمین امانت اللہ خان ہیں جبکہ دیگر ممبران و عہدیداران میں عام آدمی پارٹی دہلی کے ریاستی صدر اور بابر پور سے رکن اسمبلی گوپال رائے،دہلی حکومت میں وزیر عمران حسین،مٹیا محل رکن اسمبلی حاجی شعیب اقبال،سیلم پور رکن اسمبلی عبد الرحمن،مصطفی باد رکن اسمبلی حاجی یونس،ابولفضل سے کونسلر واجد خان،کونسلر ساجد،ممبر دہلی وقف بورڈ ایڈوکیٹ حمال اختر،میڈم رضیہ سلطانہ،سماجی کارکن و سیاستداں حاجی افضال سماجی کارکن حافظ جاوید و وقف بورڈ کے سیکشن آفیسران حافظ محفوظ محمد،نشاب احمد خان و دیگرکے نام شامل ہیں۔اس طرح یہ کمیٹی کل 26ارکان پر مشتمل ہے جس کی آج وقف بورڈ آفس دریا گنج میں میٹنگ منعقد ہوئی۔میٹنگ میں چیئرمین امانت اللہ خان کے علاوہ دیگر ممبران نے شرکت کی۔میٹنگ میں طے کیا گیا کہ ذیلی کمیٹیاں بناکر کام کی تقسیم کی جائے اور فساد زدہ علاقوں میں جاکر متاثرین کی نشاندہی کے ساتھ منصوبہ بند طریقہ سے مرحلہ وارراحت رسانی و بازآبادکاری کا کام کیا جائے۔جس کے لئے ایک راحت رسانی کمیٹی کا قیام کیا گیا جوکیمپ لگاکر فساد متاثرین کی نشاندہی کرکے انھیں فورا ریلیف مٹیریل پہونچانے کاکام کرے گی جس کے لئے کل چار مقامات پر کیمپ لگائے جائیں گے۔1۔مصطفی باد عید گاہ 2۔گلی نمبر 9مصطفی باد3۔بابونگر 25فٹا روڈ4۔گلی نمبر 5ماسٹر شیر محمد کے مکان کے سامنے۔ان کیمپوں میں قیام و طعام سے لیکرضروریات زندگی کی لازمی اشیاء فساد متاثرین کو مہیا کرائی جائیں گی جبکہ متاثرین کے علاج کے لئے میڈیکل سہولت بھی دستیاب کرائی جائے گی۔اسی طرح ایک بازآبادکاری کمیٹی بنائی گئی جو متاثرہ علاقوں کا دورہ کرکے فساد میں خاکستر کردئے گئے مکانات و دوکانوں کے نقصانات کا اندازہ لگائے گی اور ان کی باز آباد کاری و تجدید کاری میں تعاون کرے گی۔اس کمیٹی کام یہ بھی ہوگا کہ ان عبادتگاہوں کی بھی نشاندہی کی جائے جو فساد میں نذر آتش کردی گئیں۔ان مذہبی مقامات کی فورا تجدید کاری کا عمل شروع کیا جائے گا۔وقف بورڈ ریلیف کمیٹی کے تحت ایک ذیلی لیگل کمیٹی بھی بنائی گئی جو متاثرین کو قانونی مدد فراہم کرے گی۔ریلیف کمیٹی کی میٹنگ کے دوران کمیٹی کے چیئرمین امانت اللہ خان نے کہاکہ ہماری ہر ممکن کوشش ہوگی کہ فساد متاثرین کا حوصلہ بحال کیا جائے اور ان کو ازسر نوزندگی شروع کرنے میں ہر ممکن تعاون کیا جائے۔امانت اللہ خان نے آگے کہاکہ شمال مشرقی دہلی میں ہوئے فسادات میں جن لوگوں کا نقصان ہوا ہے خواہ ان کے مکانات جلے ہوں یا کاروبار تباہ ہوگیا ہوبنامذہب کی تفریق کے ان سب کوان کے پیروں پر کھڑا کرنے کی ہر ممکن کوشش کریں گے اور جو بھی تعاون ہوگا اس سے دہلی وقف بورڈ پیچھے نہیں ہٹے گا۔انہوں نے مزید کہاکہ دہلی وقف بورڈ نے ریلیف کمیٹی میں سماج کے بہت معزز لوگوں کو شامل کیا ہے جو انشاء اللہ پوری دلچسپی،محنت اور دیانتداری کے ساتھ فساد متاثرین کی بازآباد کاری کا کام انجام دے گی۔ اس موقع پر امانت اللہ خان نے پولیس اور مرکزی حکومت سے غیر جانبداری کے ساتھ انسانی بنیاد پر کام کرنے کی اپیل کی اور کہاکہ یہ ملک سب کا ہے اور حکومت کو سرکاراور انتطامیہ پر عوام کا اعتماد بحال کرنے کے لئے آگے آنا چاہئے

Facebook Comments